اردو | العربیہ | English



اردو | العربیہ | English

یورپی یونین سے انخلا کیلیے برطانیہ کو 31 جنوری تک مہلت مل گئی

پلوامہ سے ایل او سی۔۔۔عبرتوں کی نئی کتھا


WhatsApp
256



پلوامہ سے ایل او سی۔۔۔عبرتوں کی نئی کتھا

تحریر:محمد جمیل راھی ایڈووکیٹ
28فروری 2019

"پوامہ حملے کے بعد گہرے عسکری ادراک کی ضرورت تھی جس سی ھندوستانی فوج عاری دکھائی دی۔تین بار زخم چاٹنے پر مچبور ہونے والی بھارتی فوج بھلا لوھے کا چنا چبانے کی صلاحیت کہاں رکھتی تھی جو خود سے بڑا پتھر اٹھانے کی ناکام کاروائی کر کے مطعون ٹھری"
کشمیر کے محاذوں پر 1947 کی پیش قدمی روکی نہ جاتی تو آج نہ ایل او سی ہوتی اور نہ آئے روز بھارت کو ذلت آمیز خفت سے دوچار ہونا پڑتا۔اور نہ ھی کشمیری نوجوان نسل فدائی حملہ آور بننے پر مجبور ہوتی۔تین بار پاکستان پر جنگیں مسلط کر کے، مشرقی پاکستان کو کاٹ کر، دھشت گردی کی مسلسل کا رروائیاں جاری رکھ کر، حتی' کہ 1998 میں ایٹمی دھماکے کر کے اس خطے کو بارود اور ایٹمی اسلحہ کے ڈھیر پر لا کھڑا کر کے بھی توسیع پسندی کا خمار نہ اترا تھا۔ اندھیروں میں چھپ کر وار کرنے، دم دبا کر بھاگنا۔یوں دکھائی دیتا ھے اسکی عادت پرانی ھے۔ اس قوم کا ہر قوت کو اپنا آقا تسلیم رکھنا ایک ۔مسلمہ تاریخی عمل ہے ۔

پلوامہ فدائی حملے نے سات لاکھ انڈین فوج کی مقبوضہ وادی میں ھوا اکھاڑ دی ھے، ان کےاوسان خطا ہو چکےہیں، وگرنہ بد حواسی میں پاکستا کا رخ کرنے کی کبھی غلطی نہ دھراتے۔27 فروری کی صبح جنگی طیاروں کا لاہور اور سیالکوٹ میں داخل ہونے کی ناکامی کے بعد صوبہ کے پی کے میں بالا کوٹ جبہ کے مقام پر داخل ہو کر حملہ کی کوشش اعلان جنگ ھی تو تھا۔طیاروں کی تباھی اور پائلٹوں کی گرفتاری پر ماسوائے پچھتاوے کے اور کیا بچا ھے؟ پاک بھارت جنگی تاریخ کاایک نیا باب رقم ہوا ھے۔چالیس برس سے دھشت گردی کی غیر معمولی جنگ سے نبرد آزما پاک آرمی نے اس بزدلانہ حملے کا کاؤنٹر کر کے اپنی جراءت، بہادری اور صلاحیتوں کا لوھا منوا لیا ھے۔دانت کے بدلہ جبڑا توڑ نے کی گیڈر بھبھکیاں دینے والو ں نے اپنے منہ کی کھائی ھے۔جہاز مار گرانا، پائیلٹ ز ندہ پکڑ لینا یہ ثابت کرتا ھے کہ افواج پاکستان دھشت گردی کی جنگ سے کندن بن کر نکلے ہیں۔بر وقت مستعد، ہر گھڑی تیار وکامران اور چاک و چوبند۔19 فروری کو ہمسائیگی اور علاقائی امن آڑے آگیا تھا ۔برداشت اور رواداری کو کمزوری سمجھ لیا گیا تھا۔ساری غلط فہمیاں دور کردیں جوانوں نے۔قوم کا سر فخر سے بلند کردیا۔ایٹمی دھماکہ کی تاریخ دھرا دی پہل نہیں کی۔جاحیت میں کبھی پہل نہیں کرتے لیکن بدلہ لینے کا ھنر بھی جانتے ہیں اور دفاع کا حق بھی رکھتے ہیں۔ارض وطن کو نظر غائر سے دیکھنے والی ھر آنکھ نے دیکھ لیا۔پوری قوم متحد۔اپنی سپاہ کی پشت پر کھڑی ھے ہر قربانی دینے کیلئے۔دنیا نے وڈیو کلپ دیکھ لئے ہوں گے۔پاک فوج کے جوانوں پر گلاب کی پتیاں نچھاور کی جا رھی ہیں۔دوسری جانب سکتے کا عالم ھے جیسے اسٹیڈیم میں جاوید میانداد نے چھکا لگا دیا ہو۔

اے وطن کے سجیلے جوانوں
سارے نغمے تمہارے لئے ہیں

پاکستانی فوج نے 19 فروری مظرآباد پر بزدلانہ کاروائی کے بعد جو صبر کا پیمانہ تھام رکھا تھا وہ اس وقت لبریز ھو گیا جب 27 فروری کی صبح انڈین فوج کے جنگی جہازوں نے پیشگی دھمکی کو خاطر میں نہ لاتےھوئے تین مقامات سے پاکستان میں داخلے کی ناکام کوشش کی اور آخر کار منہ کی کھائی۔پاک آرمی کی فضائیہ نے برق رفتار جوابی کارروائی کرتے ہوائے دوجنگی جہاز مار گرائے اور آخری اطلاعات آنے تک ایک پائیلٹ ابھی نندن کو گرفتار بھی کرلیا تھا۔اسطرح چند روز قبل کیا جانے والا اپناچیلنج نبھا دیا جس میں کہا گیا تھا کہ" اب ھم سرپرائیز دیں گےانڈیا انتظار کرے" جو کہا سچ کر دکھا یا۔ابھی بہت سی تفصیلات اور خبریں مزید آنا باقی ہیں جس کے لئے انتظار کرنا ہو گا.

۔پاک بھارت دشمنی کی جڑیں بہت گہری ہیں جس کے تانے بانے ھندو قائدین ھزار سالہ غلامی سے جوڑتے ہیں۔انڈین فیصلہ ساز یہ بھول گئے کہ یہ 1971 والا پاکستان نہیں یہ 2019 کا ایٹمی ملک ہے جو کئی دہائیوں سے دھشت گردی کی چو مکھی جنگ لڑ لڑ کر سونے سے کندن بن چکی ھے اور اب دنیا ان سے جنگی اسباق سیکھنے آتی ہے۔گھر کی آگ بجھا نہ سکے چلے تھے ھمسائیوں کا گھر جلانے۔18 سے زائد علیحدگی کی تحریکوں کا سامنا ھے اس فوج کو۔2020 میں علیحدہ خالصتان بنانے کی دستخطی تحریک زور پکڑ رھی ھے۔دلت بھی سر اٹھا رھے ہیں۔ذات پات کے نظام سے بیزاری بھی انگڑائی لے رہی ہے۔عدم برداشت کے رویوں نے چھوٹی قوموں سمیت 30 کروڑ مسلمانوں کو بھی سعچنے پر مجبور کر دیا ھے کہ کب تک جبر کے اس ماحول کو برداشت کیا جائے۔پاکستان کو سورج کی پہلی کرن کی طرح تحلیل ہوتے دیکھنے کی خواہش رکھنے والوں کے نی صرف دانت کھٹے ہوئے ہیں بلکہ انتہا پسندی سے بیزار اکثریت سیاسی جماعتوں جنکی تعداد اکیس ہے پاکستان پر بزدلانہ حملے ،ظلم ذلت آمیز پسپائی اور جگ ھنسائی پر شدید رد عمل کا اظہار کیا ھے اور اس بزدلانہ حرکت کو مودی سرکار کی الیکشن جیتنے کی بھونڈی حرکت قرار دیا ھے۔ظلم و جبر کا ہر حربہ مقبوضہ وادی میں آزمایا جا چکا ہے۔

لیکن کشمیری قوم کسی قیمت پرحریت کی جدوجہد سے دستبردار ہونے کو تیارنہیں سوائے آزادی کے۔ عسکری جدوجہد میں مقا۔ی کشمیری طلباء کی فدائی کاروائیوں اس تحریک کی نئے دور میں داخلے کی خبر دے رہا ہے ۔پلوامہ حملہ اس نئے تناظر میں تمام انڈین اسٹیک ہولڈرز اور انکی حامی قوتوں کو دعوت فکر دے رہا تھا اس تنازعہ کا خاتمے کا وقت آگیا ھے۔جبری طور پر مزید غلامی ابناقابل برداشت ٹھہری ھے۔قابل غور پہلو یہ ہے کہ ہندوستان اس چو مکھی لڑائی کا متحمل ہو سکے گا جہاں اند بھی نفرت اور انتقام کے طوفاں برپا ہوں؟۔امریکہ اندھی جنگ لڑتے لڑتے نہ ڈرف اپنا سپر پاور ہونے کا بھرم کھو چکا ھے بلکہ افغانستان میں شیروں کی کچھار میں دھنس کر کراہ رہا ھے۔وقت آگیا ھے دانشمندانہ سوچ اپنانے کا۔جیو اور جینے دو کے اصول اپنانے کا۔توسیع پسندانہ سوچ سے دستبرداری کا۔ورنہ ھمسائے میں ایک یونائیٹڈ اسٹیٹس آف رشیا ہوتا تھا جو سکڑ کر محض روس رہ گیا ھے۔فلیش پوائنٹ پر خدانخواستہ کسی ایک نے بھی ایٹمی شعلہ بھڑکا دیا تو باقی رھے گا نام اللہ۔قدرت بار بار موقع نہیں دیتی۔

"پلوامہ حملے کے بعد گہرے عسکری ادراک کی ضرورت تھی جس سی ھندوستانی فوج عاری دکھائی دی۔تین بار زخم چاٹنے پر مچبور ہونے والی فوج بھلا ایٹمی لوھے کا چنا چبانے کی صلاحیت کہاں رکھتی تھی جو خود سے بڑا پتھر اٹھانے کی ناکام کاروائی کر کے مطعون ٹھری"
فاعتبروا یا اولابصار














WhatsApp




متعلقہ خبریں
’’بھارتی سپریم کورٹ آرٹیکل 370 ختم کرنے کا فیصلہ کالعدم ... مزید پڑھیں
حالیہ پاک۔بھارت بحران کشمیری حریت پسندوں کو کیا پیغام دیتا ... مزید پڑھیں
شکست خوردہ داعش جنگجوؤں کے بیوی بچوں کو بے ملک ... مزید پڑھیں
بی آر ٹی کا عذاب ... مزید پڑھیں
بھارت کے میزائل حملے کی دھمکی پر پاکستان کا جواب ... مزید پڑھیں
ملّا عمر، امریکہ اور پاکستان ... مزید پڑھیں
سپاہی چندو بابو لال سے پائلٹ ابھی نندن تک ... مزید پڑھیں
جنوبی ایشیا میں اسرائیلی مداخلت ... مزید پڑھیں
پلوامہ سے ایل او سی۔۔۔عبرتوں کی نئی کتھا ... مزید پڑھیں
انڈیا کو پانی کی جنگ مہنگی پڑے گی ... مزید پڑھیں
محمد بن سلمان نے ولی عہدی تک کا سفر کیسے ... مزید پڑھیں
ساہیوال کا واقعہ: سی ٹی ڈی پنجاب کیا ہے اور ... مزید پڑھیں
امریکی صدر نے افغانستان کی جنگ میں بھارت کے کردار ... مزید پڑھیں
" آپریشن آل آؤٹ "تجزیاتی رپورٹ ... مزید پڑھیں
مقدس مندر میں خواتین داخل‘ تاریخ رقم ، ہنگامے شروع ... مزید پڑھیں
انڈین کون ہیں اور کہاں سے آئے ہیں؟ انڈیا کی ... مزید پڑھیں
متعلقہ خبریں
شاہی جوڑا اور یروشلم کا محافظ
’’بھارتی سپریم کورٹ آرٹیکل 370 ختم کرنے کا فیصلہ کالعدم قرار دے‘‘ ، اے جی نورانی
حالیہ پاک۔بھارت بحران کشمیری حریت پسندوں کو کیا پیغام دیتا ہے؟
شکست خوردہ داعش جنگجوؤں کے بیوی بچوں کو بے ملک و قوم مستقبل کا سامنا
بی آر ٹی کا عذاب
بھارت کے میزائل حملے کی دھمکی پر پاکستان کا جواب اور امریکی مداخلت
ملّا عمر، امریکہ اور پاکستان
سپاہی چندو بابو لال سے پائلٹ ابھی نندن تک
جنوبی ایشیا میں اسرائیلی مداخلت
پلوامہ سے ایل او سی۔۔۔عبرتوں کی نئی کتھا

مقبول خبریں
ویڈیو گیلری

آزادی کی تحریکوں کو دبایا تو جا سکتا ہے لیکن ختم نہیں کیا جا سکتا : پاکستانی ہائی کمشنرعبدالباسط

بھارتی اشتعال انگیزی کا ذمہ داری سے جواب دے رہے ہیں ،عاصم باجوہ

پاکستان اورسعودی عرب حقیقی بھائی ہیں،علما اکرام مسلم امت کے اتحاد میں کردار ادا کریں:امام کعبہ

بڈگام میں بھارتی فوج کی فائرنگ، مزید 8 کشمیری شہید، پاکستان کا شدید احتجاج

فرانس میں فائرنگ کرکے 3 افراد کوقتل کرنے والے حملہ آورکی ہلاکت کی تصدیق

سپورٹس
انٹرنیشنل کرکٹ چاہیے بھلے ’بی ٹیم‘ ہی سہی
اکتوبر 1990 میں نیوزی لینڈ کی ٹیم کو پاکستان کے دورے پہ مزید پڑھیں ...
ویب ٹی وی
ٹورازم
پاکستان میں خوبصورت اور دلکش مناظر کی کمی نہیں ہے۔
پاکستان میں خوبصورت اور دلکش مناظر کی کمی نہیں ہے۔ posted by Abdur مزید پڑھیں ...
انٹرٹینمینٹ
وینا اداکاری سے گلوکاری کا سفر
وینا ملک کو زیادہ تر لوگ بطور اداکارہ و ماڈل جانتے ہیں مزید پڑھیں ...
مذہب
بیویاں شوہروں کو طلاق دے سکیں گی والا نکاح نامہ زیرغور نہیں، اسلامی نظریاتی کونسل
اسلام آباد(ویب ڈیسک) اسلامی نظریاتی کونسل کا کہنا ہے کہ مزید پڑھیں ...
بزنس
10 بینکوں کو80 کروڑ روپے سے زائد جرمانہ
10 بینکوں کو80 کروڑ روپے سے زائد جرمانہ، کون کونسے بینک مزید پڑھیں ...