اردو | العربیہ | English



اردو | العربیہ | English

روس کے زیرانتظام کریمیا کے کالج میں بم دھماکے سے 18 افراد ہلاک

کشمیری لڑکی کے ریپ کامقدمہ لڑنے والی وکیل دپیکا سنگھ کو قتل کر نے دھمکیاں


WhatsApp
128



دپیکا سنگھ کے خلاف ایک مہم چل گئی ہے اور انھیں دھمکیاں دی جا رہی ہیں

کٹھوعہ(مانیٹرنگ ڈیسک) انڈیا کے زیرِ تسلط کشمیر میں ایک آٹھ سالہ بچی کے وحشیانہ ریپ اور قتل کے واقعے کے بعد علاقے میں بے چینی پھیلی ہوئی ہے، سوشل میڈیا پر اس حوالے سے شدید غم و غصے کا اظہار کیا جا رہا ہے

بچی کے لواحقین کو قانونی چارہ جوئی سے روکنے کے لیے کچھ عناصر بےحد کوشاں ہیں۔ ان کی وکیل دپیکا سنگھ کو شدید ڈرایا دھمکایا جا رہا ہے اور ان کی ساکھ کو نقصان پہنچانے کے لیے ایک مہم چلائی جا رہی ہے۔حال ہی انڈین میڈیا پر بیان دیتے ہوئے دپیکا سنگھ نے بتایا کہا کہ انھیں جان کا خطرہ لاحق ہے اور اس حوالے سے انھوں نے کشمیر کی ہائی کورٹ میں ایک درخواست دی ہے جس کے بعد عدالت نے پولیس کو حکم جاری کیا دپیکا سنگھ کی حفاظت کو یقینی بنایا جائے۔

دپیکا سنگھ کا کہنا تھا کہ ’میں نہیں جانتی کہ میں کب تب زندہ ہوں۔ میرا ریپ ہو سکتا ہے، میری عزت لوٹی جا سکتی ہے، مجھے بھی قتل کیا جا سکتا ہے۔ کل مجھے دھمکی دی گئی کہ ہم تمھیں معاف نہیں کریں گے۔ دپیکا سنگھ نے انڈین میڈیا کو یہ بھی بتایا ہے کہ جموں بار ایسوسی ایشن کے صدر نے انھیں خود عدالت کے باہر دھمکی دی تھی۔دپیکا سنگھ نے انسانی ہمدردی کی بنیادوں پر کئی ایسے کیسز لڑے ہیں ۔دپیکا سنگھ کی جانب سے جاری کردہ ایک پریس ریلیز میں بتایا گیا ہے کہ زی ٹی وی کے ایک پروگرام میں کسی بھٹی صاحب نے الزام لگایا کہ دپیکا سنگھ نے گذشتہ چند روز جواہر لعل نہرو یونیورسٹی میں گزرے جو کہ بالکل غلط ہے اور وہ کبھی اس یونیورسٹی میں گئی ہی نہیں۔

پریس ریلیز میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ بھٹی صاحب نے پروگرام میں جو اشارہ دیا کہ اس کیس کے نام پر بہت رقم جمع کی گئی ہے یہ بھی درست نہیں اور دپیکا سنگھ یہ کیس مکمل طور پر مفت میں لڑ رہی ہیں۔

دپیکا کے مخالفین کا مطالبہ ہے کہ اس کیس کی تفتیش جموں پولیس کی کرائم برانچ سے لے کر سی بی آئی کے ذمہ کی جائے جبکہ کچھ لوگوں نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ اگر ایسا ہوا تو سی بی آئی پر کچھ با اثر لوگ اثرانداز ہو کر مجرموں کو بچا لیں گے۔

دپیکا سنگھ کون ہیں؟

دپیکا سنگھ وکیل ہونے کے ساتھ ساتھ انسانی حقوق کے لیے کام کرنے والی غیر سرکاری تنظیم وائس فار رائٹس کی سربراہ بھی ہیں۔ بی بی سی کی عالیہ نازکی سے بات کرتے ہوئے انھوں نے بتایا کہ فروری کے اوائل میں انھوں نے عدالت میں استدعا کی تھی کہ اس کیس کی تفتیش کی نگرانی عدالت خود کرے۔

آٹھ سالہ بچی کے ریپ اور قتل کیس میں پولیس کی کرائم برانچ نے تفتیش کی ہے تاہم دپیکا سنگھ کے مخالفین کا اصرار ہے کہ اس کیس کی تفتیش سی بی آئی کے حوالے کی جائے۔ ماضی میں دپیکا سنگھ نے انسانی ہمدردی کی بنیادوں پر کئی ایسے کیسز لڑے ہیں جن کا تعلق مفادِ عامہ سے تھا۔ ان کا کم عمر بچوں کے مجرمانہ کیسز میں وکالت کا کافی تجربہ ہے۔ اس کے علاوہ ان کے اہم کیسز میں پھلوں اور سبزیوں کی کاشت کاری کے دوران استعمال ہونے والے کاربن کاربائڈ پر پابندی لگانے کا کیس بھی شامل ہے۔ واضح رہے کہ کاربن کاربائڈ انسانی صحت کے لیے مضر ہے۔ اس کے علاوہ انھوں نے بارودی سرنگوں کے متاثرہ افراد کے لیے متعدد کیسز لڑے ہیں۔ انھوں نے ایک ذہنی طور پر غیر متوازن پاکستانی خاتون کا کیس بھی لڑا جو کہ 26 سال سے ایک انڈین جیل میں بند تھی اور اسے یہ معلوم نہیں تھا کہ وہ کہاں سے آئی ہے۔

ماضی میں وہ کشمیر ٹائمز کے ساتھ بطور صحافی بھی کام کر چکی ہیں۔


WhatsApp




متعلقہ خبریں
یہ کیسی تبدیلی ہے؟ ... مزید پڑھیں
شاباش چیف جسٹس ... مزید پڑھیں
حِجاب اور عبایا؛ پردہ یا فیشن؟ ... مزید پڑھیں
عورت کی آزادی یا عورت کی تباہی؟ ... مزید پڑھیں
فلسطین کا ایک اور صحافتی سپاہی اس دنیا سے چلا ... مزید پڑھیں
استاد: آجر و اجیر کی زنجیروں میں جکڑا مقدس رشتہ ... مزید پڑھیں
آپریشن دوارکا: پاک بحریہ کی ایک آبدوز نے پوری انڈین ... مزید پڑھیں
بھارت میں بیوی کرائے پر دستیاب ... مزید پڑھیں
یوم فضائیہ؛ پاکستانی شاہینوں کا دن ... مزید پڑھیں
انڈین سپریم کورٹ نے ہم جنس پرستی کو قانونی قرار ... مزید پڑھیں
انڈیا کی نصف آبادی کو پانی کے بحران کا سامنا ... مزید پڑھیں
فنانشنل ایکشن ٹاسک فورس کا چھ روزہ اجلاس پیرس میں ... مزید پڑھیں
پاکستان مخالف پراپیگنڈہ آپریشنز کابل سے چلائے جانے کا انکشاف ... مزید پڑھیں
آرمی چیف کا دورہ ماسکو , پاکستان ، روس کا ... مزید پڑھیں
مجھے را نے کہا تھا کہ نواز شریف کو اذیت ... مزید پڑھیں
کشمیری لڑکی کے ریپ کامقدمہ لڑنے والی وکیل دپیکا سنگھ ... مزید پڑھیں
متعلقہ خبریں
عورت کی آزادی : عزت یا ذلت؟
یہ کیسی تبدیلی ہے؟
شاباش چیف جسٹس
حِجاب اور عبایا؛ پردہ یا فیشن؟
عورت کی آزادی یا عورت کی تباہی؟
فلسطین کا ایک اور صحافتی سپاہی اس دنیا سے چلا گیا
استاد: آجر و اجیر کی زنجیروں میں جکڑا مقدس رشتہ
آپریشن دوارکا: پاک بحریہ کی ایک آبدوز نے پوری انڈین نیوی کے چھکے چھڑا دیئے
بھارت میں بیوی کرائے پر دستیاب
یوم فضائیہ؛ پاکستانی شاہینوں کا دن

مقبول خبریں
ویڈیو گیلری

آزادی کی تحریکوں کو دبایا تو جا سکتا ہے لیکن ختم نہیں کیا جا سکتا : پاکستانی ہائی کمشنرعبدالباسط

بھارتی اشتعال انگیزی کا ذمہ داری سے جواب دے رہے ہیں ،عاصم باجوہ

پاکستان اورسعودی عرب حقیقی بھائی ہیں،علما اکرام مسلم امت کے اتحاد میں کردار ادا کریں:امام کعبہ

بڈگام میں بھارتی فوج کی فائرنگ، مزید 8 کشمیری شہید، پاکستان کا شدید احتجاج

فرانس میں تیز رفتار گاڑی فوجیوں پر چڑھ دوڑی، 6 زخمی

سپورٹس
یوتھ اولمپکس؛ پاکستانی ریسلر عنایت اللہ نے امریکی حریف کو شکست دے دی
بیونس آئرس(ویب ڈیسک) پاکستانی ریسلر عنایت اللہ نے یوتھ اولمپکس مزید پڑھیں ...
ویب ٹی وی
ٹورازم
پاکستان میں خوبصورت اور دلکش مناظر کی کمی نہیں ہے۔
پاکستان میں خوبصورت اور دلکش مناظر کی کمی نہیں ہے۔ posted by Abdur مزید پڑھیں ...
انٹرٹینمینٹ
علی ظفر معصوم بننے کی کوشش کررہا ہے، میشا شفیع
لاہور(ویب ڈیسک) گلوکارہ میشا شفیع نے علی ظفر پر جنسی مزید پڑھیں ...
مذہب
درود پر تنازع‘ جہلم ،مسجد کے منتظم پر توہینِ مذہب کا مقدمہ
جہلم ( ویب ڈیسک) پاکستان کے صوبۂ پنجاب کے ضلع جہلم کی مزید پڑھیں ...
بزنس
زرمبادلہ کے ذخائر 15 ارب ڈالر کی سطح سے نیچے آگئے
کراچی(ویب ڈیسک) رواں ہفتے زر مبادلہ کے ذخائر میں 10 کروڑ مزید پڑھیں ...