اردو | العربیہ | English



اردو | العربیہ | English

اس ہندوستانی نے 39 بار کیا پیار، 39 بار کی شادی اور ہیں 101 بچے

در پولیس کو سلام اور سیف سٹی پراجیکٹ کا نوحہ


WhatsApp
392




کالم نگار | اسد اللہ غالب....انداز جہاں

پہلے تو میں اپنے کل کے کالم پر قارئین سے معذرت خواہ ہوں کہ ادھر قیام امن کے اعلان پر میںنے دا دو تحسین کے ڈونگرے برسائے، ادھرا س اعلان کی ہوا سرک گئی۔ایک بار جنرل ضیا الحق کو سائیکل سواری کا شوق لاحق ہوا، ابھی واہ واہ ہو رہی تھی کہ امریکی سفارت خانے کو کھنڈر بنا دیا گیا تھا۔

میرا آج کا یہ کا لم ایک چشم دید گواہی ا ور چشم کشا کہانی ہے۔

میرا قلم بے تاب ہے کہ پولیس کی بے بہا قربانیوں پر اسے سلام پیش کروں۔ پولیس سب سے آسان ٹارگٹ ہے اور یہ بات ڈیوٹی پر کھڑے ہونے والے ہر سپاہی کے علم میں ہوتی ہے، پولیس کی گاڑیوں کو آئے روز نشانہ بنایا جاتا ہے اور ایک دھماکہ ہوجانے کے بعد پولیس امدادی سرگرمیوں کے لئے جمع ہو جاتی ہے تو دوسرا دھماکہ کر کے اعلی ترین پولیس افسروں کی جان بھی لینے کی متعدد مثالیں بیان کر سکتا ہوں۔ پنجاب اسمبلی اورمناواں پولیس سنٹر کے حملے کسے یاد نہیں۔
اس قدر سنگین خطرات کے باوجود پولیس نے کسی گھبراہٹ یا جھلاہٹ کا مظاہرہ نہیں کیا، کوئی سپا ہی یا افسر استعفے دے کر گھر نہیں گیاا ور کسی نے آج تک دن یا رات، بارش یا دھوپ میں ڈیوٹی سے انکار نہیں کیا۔
ہم سب جانتے ہیں کہ پولیس کو کیا تنخواہ ملتی ہے، چپڑاسی کی تنخواہ زیادہ ہو گی عام سپاہی اس سے بھی کم۔یہ لوگ گھر بارسے دور خود اپنا پیٹ کیسے پالتے ہیں اور پیچھے اپنے والدین یا اہل و عیال کے مالی بوجھ سے کیسے نبٹتے ہیں۔ اس پر ہم نے کبھی غور نہیں کیا، بس ہمارا زور پولیس کی دشنام طرازی پر ہے، سارے ٹاک شوز میں پولیس کو مسخروں کے طور پر پیش کیا جاتا ہے سینماکی فلموں میں بھی ان کے ساتھ اسی بد سلوکی کا مظاہرہ کیا جاتا رہاہے۔ ہم اس پولیس کو طعنہ دیتے نہیں تھکتے کہ موٹر وے پولیس کو دیکھو کس قدر چابک دستی سے ڈیوٹی دیتی ہے اور رشوت بھی نہیں لیتی مگر ہم یہ بھی جانتے ہیں کہ موٹر وے پولیس کی تنخواہ کس قدر زیادہ ہے اور جو ہم نہیں جانتے وہ یہ کہ جتنے چالان کریں، اسی قدرکمیشن بھی ملے گا۔ ہم لندن پولیس سے اپنی پولیس کامقابلہ کرتے ہیں ، کس قدر نادان ہیں ہم کہ لندن پولیس کو ارکان اسمبلی کے ڈیروں پر حاضری نہیں دینا پڑتی۔ لندن پولیس کو وزیر اعلی، گورنر ، وزیر اعظم یا صدر کے لئے تین تین متبال روٹوں پر کھڑا نہیں کیا جاتا۔ وہاں کا وزیر اعظم جانے ا ور ملک ا لموت جانے۔
ہم اپنی پولیس کو حقارت ا ور نفرت کی نگاہ سے دیکھتے ہیں اور پھر ا س سے نتائج کی توقع بھی رکھتے ہیں۔ حقیقت میں حقارت اور نفرت کے حق دار تو ہم ہیں۔
ہم تھانے جاتے ہیں، وہاں ہماری رپٹ لکھنے والا کوئی نہیں ہوتا۔ ہم تھانہ انچارج کو صلواتیں سناتے ہیں کہ وہ کہاں غائب ہو گیاا ور ہمیں نہیںمعلوم کہ وہ بے چارہ ساری ساری رات ناکوں پر کھڑی نفری کو چیک کرتا ہے، اور کہیں اس کی آ نکھ لگ بھی جائے تو موبائل فون اور وائر لیس سیٹ اس کے دونوں کانوں کے آس پاس پڑے ہوتے ہیں۔ میں تو حیران ہوں کہ اگر یہی حالات کار ہمارے دفتری بابوﺅں کے ہوتے تو وہ کب کے پاگل خانوں میں پہنچ چکے ہوتے ۔
مجھے تو سمجھ نہیں آتی کہ لاہور پولیس کا ڈی آئی جی گوشت پوست کا انسان ہے یا کوئی ربوٹ جو سارے طعنے سنتا ہے، اپنے افسروں اور جوانوں کی لاشوں کو کندھا بھی دیتا ہے اور پھر بھی اس کا لہجہ ٹھنڈا ٹھار، میںنے اس سے زیادہ متحمل مزاج انسان کم دیکھے ہیں۔ وہ بات کو سمجھنے میں دیر نہیں لگاتا اور پھر جو حرف تسلی بولتا ہے،اس پر پورا اترتا ہے۔آفریں ہے ایسے پولیس افسر کی۔ اسے ا ورا سکی ماتحت پولیس کو درجہ بدرجہ سلام۔
مگر کل دن کاا ٓغاز ایک بد شگونی سے ہوا۔ رانا ثنا اللہ بولے ا ور د ل کو دھڑکالگا کہ آج کوئی گل کھلے گا۔ کوئی انہونی ہو گی۔ سہہ پہر کو جب میں اپنے ڈاکٹر کے پا س جانے کے لئے کوٹ لکھپت کا پل اتر رہا تھا تو سامنے سے موٹر سائیکلیں حواس باختہ ہو کر واپس آ تی دکھائی دیں، یوں لگا کہ سڑک پر ٹائر جلا کر آگ لگا دی گئی ہو، پھر کوئی میرے کانوں کے قریب چنگھاڑتے ہوئے بولا کہ گاڑی ریورس کرو، میںنے نرمی سے پوچھا ، ہوا کیا ، اس نے کہا کہ بلاسٹ ، میںنے کہا کہ یہ تو متروک سبزی منڈی کی دکانوں کا ملبہ گرا پڑا ہے اور وہی لوگ ا سکے خلاف احتجاج بھی کر رہے ہوں گے، اس شخص کے لہجے میں پہلے سے زیادہ کرختگی آ چکی تھی،۔ اس کے بس میں ہوتا تو وہ ٹھڈا مار کر میری گاڑی کا منہ موڑ دیتا، میں نے اسے پہچاننے کی کوشش کی، پتہ چلا کہ وہ عقب سے آنے والی 1122 کے عملے کا رکن ہے ۔
سیف سٹی پراجیکٹ کا ہیڈکوار ٹر ارفع کریم آئی ٹی ٹاور میں واقع ہے ، یہیں اس کے سربراہ بھی براجمان ہیں، چینوں کی بات کو حرف مقدس سمجھا گیا۔ کل کے دھماکے میں سیف سٹی پراجیکٹ کی آنکھوں کے سامنے ایک دھماکہ ہوا مگر اس کے کیمرے اندھے، گونگے اور بہرے ثابت ہوئے۔
امدادی سرگرمیوں کے لئے بھی عقل استعمال نہیں کی گئی ،۔ دھماکے سے چند قدم کے فاصلے پر اتفاق ہسپتال کے باہر درجنوں ایمبولنسیں موجود تھیں ، اس کے باوجود دور دراز کے ٹھکانوں سے1122 کی گاڑیوں کو طلب کیا گیاا ور بے عقلی کی انتہا یہ ہے کہ جن زخمیوں کو کندھوں پر اٹھا کرفوری طور پر قریبی ہسپتال پہنچایا جاسکتا تھا ، انہیں جنرل ہسپتال، شیخ زائد ہسپتال اور جناح ہسپتال لے جایا گیا، جن لوگوں کا بے تحاشا خون رس رہا تھا، ان پر اس سے زیادہ کیا ظلم ہو سکتا ہے۔میری تجویز ہے کہ جس طرح ڈ ینگی کے دنوںمیں ہر سرکاری ا ور نجی ہسپتال کو علاج کا پابند کیا گیا تھا۔ اسی طرح حادثے، دھماکے یا ایمرجنسی میں ہر نجی ہسپتال کو علاج کا پابند کیا جائے۔


WhatsApp




متعلقہ خبریں
افغان باقی، کہسار باقی ... مزید پڑھیں
اقلیتوں کا عالمی دن۔۔۔تجزیہ ... مزید پڑھیں
ارض حرمین پر منڈلاتی گھٹائیں ... مزید پڑھیں
سانپ اور سیڑھی کا کھیل ... مزید پڑھیں
اسرائیلی تاریخ ... مزید پڑھیں
آسیہ" نامی عیسائی عورت اور ہمارا قانون ... مزید پڑھیں
ارضِ حرمین پر منڈلاتی گھٹائیں ... مزید پڑھیں
حکمرانوں کے تابناک اور روشن کردار ... مزید پڑھیں
فاطمہ بنت پاکستان کا مقدمہ ... مزید پڑھیں
یہ رہی تمہاری تلاش ... مزید پڑھیں
اقوام متحدہ کے اجلاس کی روداد ... مزید پڑھیں
القدس اپنے محافظ کی تلاش میں ... مزید پڑھیں
یوم یکجہتی کشمیر کا تاریخی تعاقب و اہمیت ... مزید پڑھیں
بنیادی حقوق کا’’سراب‘‘ ... مزید پڑھیں
ابھی تو پارٹی شروع ہوئی ہے ... مزید پڑھیں
سانپ اور سیڑھی کا کھیل ... مزید پڑھیں
متعلقہ خبریں
شاہ سلمان کی آمد ۔۔۔بہار کی آمد
افغان باقی، کہسار باقی
اقلیتوں کا عالمی دن۔۔۔تجزیہ
ارض حرمین پر منڈلاتی گھٹائیں
سانپ اور سیڑھی کا کھیل
اسرائیلی تاریخ
آسیہ" نامی عیسائی عورت اور ہمارا قانون
ارضِ حرمین پر منڈلاتی گھٹائیں
حکمرانوں کے تابناک اور روشن کردار
فاطمہ بنت پاکستان کا مقدمہ

مقبول خبریں
بھارت نے حملہ کیا تو بھرپور جواب دیں گے:وزیراعظم
اس ہندوستانی نے 39 بار کیا پیار، 39 بار کی شادی اور ہیں 101 بچے
پی ایس ایل 4 ، امریکی گلوکار پٹ بل نے افتتاحی تقریب میں شرکت سے معذرت کرلی
پاکستان نے پہلے ٹی ٹوئنٹی میں ویسٹ انڈیز کو 9 وکٹوں سے شکست دے دی
ماہرہ خان نے ایک اور بین الاقوامی اعزاز اپنے نام کرلیا
شاہ سلمان کی آمد ۔۔۔بہار کی آمد
پاکستان میں خوبصورت اور دلکش مناظر کی کمی نہیں ہے۔
انسانی نظامِ ہاضمہ میں 2000 نئی اقسام کے بیکٹیریا دریافت
وہ خاتون جس کا پیشہ ہی بچے پیدا کرنا ہے
اپنے بچوں کو اٹھا کر پھرنے والا باہمت پرندہ
اپنے بچوں کو اٹھا کر پھرنے والا باہمت پرندہ
پاکستان سائبر سیکیورٹی کے حوالے سے دنیا کے 10 بدترین ممالک میں شامل
شرح پیدائش پنجاب میں کتنی ہے اور خیبر پختونخوا میں کتنی؟ اعدادوشمار سامنے آگئے
بیویاں شوہروں کو طلاق دے سکیں گی والا نکاح نامہ زیرغور نہیں، اسلامی نظریاتی کونسل
محمد بن سلمان نے ولی عہدی تک کا سفر کیسے طے کیا اور اب تک ان کی حکومت نے کیا اقدامات کیے ہیں
ویڈیو گیلری

آزادی کی تحریکوں کو دبایا تو جا سکتا ہے لیکن ختم نہیں کیا جا سکتا : پاکستانی ہائی کمشنرعبدالباسط

بھارتی اشتعال انگیزی کا ذمہ داری سے جواب دے رہے ہیں ،عاصم باجوہ

پاکستان اورسعودی عرب حقیقی بھائی ہیں،علما اکرام مسلم امت کے اتحاد میں کردار ادا کریں:امام کعبہ

بڈگام میں بھارتی فوج کی فائرنگ، مزید 8 کشمیری شہید، پاکستان کا شدید احتجاج

فرانس میں فائرنگ کرکے 3 افراد کوقتل کرنے والے حملہ آورکی ہلاکت کی تصدیق

سپورٹس
پی ایس ایل 4 ، امریکی گلوکار پٹ بل نے افتتاحی تقریب میں شرکت سے معذرت کرلی
دبئی(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان سپر لیگ کے چوتھے ایڈیشن کا باقاعدہ آغاز مزید پڑھیں ...
ویب ٹی وی
ٹورازم
پاکستان میں خوبصورت اور دلکش مناظر کی کمی نہیں ہے۔
پاکستان میں خوبصورت اور دلکش مناظر کی کمی نہیں ہے۔ posted by Abdur مزید پڑھیں ...
انٹرٹینمینٹ
ماہرہ خان نے ایک اور بین الاقوامی اعزاز اپنے نام کرلیا
دبئی (ویب ڈیسک) عالمی شہرت یافتہ پاکستانی اداکارہ ماہرہ خان نے مزید پڑھیں ...
مذہب
بیویاں شوہروں کو طلاق دے سکیں گی والا نکاح نامہ زیرغور نہیں، اسلامی نظریاتی کونسل
اسلام آباد(ویب ڈیسک) اسلامی نظریاتی کونسل کا کہنا ہے کہ مزید پڑھیں ...
بزنس
سعودی عرب کی پاکستان کو 2 پاور پلانٹس خریدنے کی منہ مانگی پیشکش
لاہور(ویب ڈیسک) سعودی عرب نے پنجاب کے دو پاور پلانٹس بغیر بولی مزید پڑھیں ...