مسلم ملٹری الائنس کی مخالفت کیوں
اردو | العربیہ | English



اردو | العربیہ | English

پاکستان سعودی عرب مشترکہ فوجی مشقیں ’’شہاب 2 ‘‘

مسلم ملٹری الائنس کی مخالفت کیوں


WhatsApp
186




ہم جب بھی سچ بولنا یا لکھنا شروع کرتے ہیں یار دوست کچھ زیادہ ہی ناراض ہو جاتے ہیں ۔ حالانکہ اللہ سبحانہ و تعالیٰ نے قرآن مجید میں واضح فرما دیا کہ ’’ سیدھی اور سچی بات کرو تاکہ تمہارے اعمال کی اصلاح ہو سکے ‘‘( الاحزاب) ۔ چودہ صدیاں قبل دیئے گے اس حکم نامے میں یہ حکمت کارفرما تھی کہ مسلم معاشروں کو تاقیامت امن کا گہوارہ بنایا جا سکے جہاں ان کی زندگیاں ، ایمان ، املاک اور عزتیں محفوظ رہ سکیں ۔ تاکہ وہ انہماک کے ساتھ اللہ کی عبادت کرنے کے ساتھ ساتھ اس کی نعمتوں کا حلال طریقوں سے بھرپور استفادہ کرسکیں ۔ بات صرف اتنی سی ہے کہ جب سے سعودی عرب کے دارالحکومت ریاض میں اسلامی سربراہی کانفرنس کا کامیاب انعقاد ہوا ہے ۔مخالفین کے کیمپ میں ایک بھونچال سا آیا ہوا ہے ۔ اس وقت سے لے کر اب تک اس کی مخالفت میں سینکڑوں کالم اور تجزیات شائع ہو چکے ہیں۔ جو اس بات کا بین ثبوت ہے کہ خطے میں سعودی عرب اپنے پتے کا میابی کے ساتھ کھیل رہا ہے ۔ اس میں کوئی شک نہیں اگر روس 30ستمبر 2015کو اپنے ایک مہربان کے کہنے پر شام پر ننگی جارحیت کا ارتکاب نہ کرتا تو پیغمبروں کی سرزمین ( شام ) بھی اغیار اور اپنوں کی لگائی ہوئی آگ سے بچ جاتی اور الحرمین شریفین بھی فتنہ گروں اور منافقین سے محفوظ ہو جاتے ۔
امت اسلامیہ گذشتہ کئی سالوں سے بدترین دہشت گردی کا شکار ہے جس نے مسلم معاشروں کی سیاسی ، مذہبی ، سماجی ، معاشی اور معاشرتی زندگیوں پر شدید منفی اثرات مرتب کیئے ہیں ۔ اس دہشت گردی کے ناسور نے گلیوں ، محلوں ، بازاروں ، شفا خانوں ، تعلیمی اداروں حتیٰ کہ عبادت خانوں کو بھی نہ بخشا ۔ جس نے مسلم نوجوانوں میں فکری انتشار پیدا کر کے ایک دوسرے کا دشمن بنا دیا ۔ اس عفریت سے نکلنے کا کوئی راستہ نہیں مل رہا تھا۔ تب خادم الحرمین شریفین اور سعودی عرب کے فرمانرواہ محترم سلمان بن عبدالعزیز آل سعود آگے بڑھے اور مسلمانوں کو اس گرداب سے نکالنے کے لیئے 34مسلم ممالک پر مشتمل اتحاد کی داغ بیل ڈال دی۔جس نے دیکھتے ہی دیکھتے ایک مؤثر عسکری اتحاد کی شکل اختیار کر لی۔ سعودی عرب کی اس کامیاب سیاسی اور عسکری پالیسی نے امن مخالف شیطانی قوتوں کو ہلا کر رکھ دیا اور انہیں مکمل طور پر کارنر کر دیا ۔
اس کانفرنس پر بے جا تنقید کرنے والوں کی عقل پر شاید پردے پڑ چکے ہیں کیونکہ کانفرنس میں دہشت گردی کے خلاف جن محرکات کو بنیاد بنا کر آگے بڑھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے وہ مندرجہ ذیل ہیں ۔ 1، دہشت گرد تنظیم ’’ داعش‘‘ کے خلاف منظم طریقے سے ملٹری آپریشن، 2 ، اسلامی دنیا میں انتہاپسندانہ سوچ کا خاتمہ جو تکفیری سوچ کو پروان چڑھانے کا سبب بن رہا ہے اور 3 مشرق وسطیٰ کے مسلم ممالک میں ایرانی کی غیر قانونی اور غیر اخلاقی proxy warکا خاتمہ ۔ جس کا آغاز شام اور عراق میں دہشت گرد گروہوں کا پیچھا کرتے ہوئے ان کا مکمل خاتمہ کیا جائیگا ۔ درحقیقت یہی وہ نظریہ امن ہے جس کی امن مخالف قوتوں کے پیٹ میں مروڑ اٹھ رہا ہے ۔ کیونکہ ان کو مشرق وسطی میں اپنے مکروہ عزائم خاک میں ملتے نظر آرہے ہیں ۔

ریاض کانفرنس کے بعد جبکہ مسلم ملٹری الائنس کو عملی میدان میں اتارنے کا فیصلہ ہو چکا ہے ۔ کیوں ایک دفعہ پھر اس اتحاد کی شدید مخالفت کی جارہی ہے اور متنازعہ بنانے کے ساتھ ساتھ فرقہ وارانہ رنگ کا تائثر بھی دیا جارہا ہے؟ ۔ وہ کیا خوف ہے وہ کیا logicہے جو امن مخالف قوتوں کے سروں پر سوار ہے ؟کوئی تو وجہ ہے جس کی پردہ پوشی کی جارہی ہے ۔ حالانکہ مسلم ملٹری الائنس کا بنیادی مقصد ، محور اور themeدہشت گردی کے خلاف لڑتے ہوئے مسلم معاشروں کو محفوظ کرنا ہے ۔ آج مسلم ممالک کو جس بدترین درندگی اور وحشیانہ دہشت گردی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اس دہشت گردی کے ناسور کو کچلنے کے لیئے یہ پاک مسلم ملٹری اتحاد معرض وجود میں لایا گیا ہے ۔ جو طاقتیں جو ممالک اس اتحاد کی مخالفت کررہے ہیں اس کا صاف مطلب ہے وہ خود دہشت گردی کو سپورٹ کررہے ہیں ۔ کیونکہ انہیں یہ خطرہ نظر آرہا ہے کہ پاک مسلم ملٹری اتحادکی وجہ سے ان کے ناپاک منصوبے نیست و نابود ہو جائیں گے ۔جس دہشت گردی کی آڑ میں وہ مسلم دنیا اور خاص کر حرمین شریفین پر قبضے کا ناپاک خواب دیکھ رہے ہیں وہ ملیا میٹ ہو جائے گا۔ درحقیقت یہ ہے ان کے خوف کی وجہ یہ ہے مسلم ملٹری اتحاد کی مخالفت کا اصل سبب ۔ یہی وجہ ہے کہ یمن ایشو سے لیکر آج تک وہ مسلم ملٹری اتحاد کا رونا رو رہے ہیں ۔تو دوسری جانب اس اتحاد کی آڑ میں تسلسل کے ساتھ پاک فوج اور جنرل راحیل شریف کی کردار کشی بھی کی جارہی ہے ۔ جب اسلام دشمن طاقتوں کا پاک فوج پر اپنا بس نہیں چلتا تو اسمبلیوں اور میڈیا میں بیٹھے ہوئے اپنے تنحواہ داروں کے ذریعے پاک فوج کی کردار کشی کرواتے ہیں ۔ جو ان کے اندرونی بغض و عناد ، نفرت اور اسلام دشمنی کا منہ بولتا ثبوت ہے ۔
ہمیں یہ سمجھنا ہو گا کہ دہشت گرد تنظیموں کے خلاف اٹھائے گے اقدامات اکیلے سعودی عرب کا فیصلہ نہیں بلکہ کانفرنس میں شریک تمام مسلم ممالک( 54) نے مکمل اتفاق رائے سے فیصلہ دیا ہے ۔ جس میں فقہ جعفریہ کے حامل ممالک عراق اور آذربائیجان حکومتوں کے صدور نے ہمہ وقت تمام کانفرنس میں بھرپور شرکت کرکے یہ ثابت کر دیا کہ یہ کانفرنس یا پھر مسلم ملٹری الائنس کسی فرقہ واریت پر مبنی کانفرنس یا اتحاد نہیں ہے۔ سوچنے کا مقام تو یہ ہے کہ ان دونوں ممالک نے دہشت گردی کے خلاف اپنائے گے کسی اقدامات کو ہدف تنقید نہیں بنایا بلکہ تمام امور پر اتفاق کیا ۔ جب کہ کانفرنس سے قبل باقاعدہ طور پر شام اور ایران کو بھی دعوت دی گئی تھی جو انہوں نے قبول نہ کر کے اخلاقی گراوٹ کا مظاہرہ کیا ہے۔ حیرت انگیز بات یہ ہے جو ہر ذی شعورکے لیئے غوروفکرکا متقاضی ہے وہ یہ ہے کہ سوائے پاکستانی میڈیا کے کسی بھی اسلامی ملک کے میڈیا نے اس کانفرنس کو یا پھر اتحاد کو متنازعہ بنانے یا پھر فرقہ وارانہ رنگ دینے کی جسارت نہیں کی ۔ جس سے پاکستان کے میڈیا پر ایک مخصوص ملک کے حامی ہونے کاتاثر پھیلتا جارہاہے جبکہ عوام کے اندر یہ سوچ بڑی شدت کے ساتھ پروان چڑھ رہی ہے کہ مملکت اسلامیہ کو ایک پڑوسی ملک کی خارجہ پالیسی کے تحت چلانے کی مذموم کوششیں کی جارہی ہے ۔ راقم کی رائے میں ارباب اقتدار کو اس کا سختی کے ساتھ نوٹس لینا ہو گا ورنہ ایسے شرپسند عناصر مملکت اسلامیہ پاکستان کو یمن ، لیبیا ، عراق یا پھر شام بنانے میں دیر نہیں لگائیں گے ۔


WhatsApp




متعلقہ خبریں
نیب کا جن بوتل سے باہر ... مزید پڑھیں
اقبال کا پا کستان ( لوہے کا چنا ) ... مزید پڑھیں
پاکستان میں چینیوں کی سیکورٹی، اولیں ذمے داری ... مزید پڑھیں
سی پیک کے بارے میں بدگمانیوں کا نیا سلسلہ ... مزید پڑھیں
پاکستان بمقابلہ حکومت پاکستان ... مزید پڑھیں
سازش ... مزید پڑھیں
برکس مشترکہ اعلامیہ میں لشکر طیبہ اور جیش محمد کی ... مزید پڑھیں
در پولیس کو سلام اور سیف سٹی پراجیکٹ کا نوحہ ... مزید پڑھیں
73 روپے کی زندگی ... مزید پڑھیں
پاکستان نے نریندر مودی کے اسرائیلی دورے پر تشویش کا ... مزید پڑھیں
احساس خوشی ... مزید پڑھیں
مسلم ملٹری الائنس کی مخالفت کیوں ... مزید پڑھیں
بھارت کا شیطانیت کو شرماتا حیا سوز چہرہ ... مزید پڑھیں
’’ب‘‘ ضر ر ’ ’پ ‘‘ پاکستانی ... مزید پڑھیں
عراقی کردستان :ایک آزاد ریاست کی کوشش ... مزید پڑھیں
جیش العدل اور آخری راؤنڈ ... مزید پڑھیں
متعلقہ خبریں
گنگو تیلی
نیب کا جن بوتل سے باہر
اقبال کا پا کستان ( لوہے کا چنا )
پاکستان میں چینیوں کی سیکورٹی، اولیں ذمے داری
سی پیک کے بارے میں بدگمانیوں کا نیا سلسلہ
پاکستان بمقابلہ حکومت پاکستان
سازش
برکس مشترکہ اعلامیہ میں لشکر طیبہ اور جیش محمد کی مذمت
در پولیس کو سلام اور سیف سٹی پراجیکٹ کا نوحہ
73 روپے کی زندگی

مقبول خبریں
ویڈیو گیلری

آزادی کی تحریکوں کو دبایا تو جا سکتا ہے لیکن ختم نہیں کیا جا سکتا : پاکستانی ہائی کمشنرعبدالباسط

بھارتی اشتعال انگیزی کا ذمہ داری سے جواب دے رہے ہیں ،عاصم باجوہ

پاکستان اورسعودی عرب حقیقی بھائی ہیں،علما اکرام مسلم امت کے اتحاد میں کردار ادا کریں:امام کعبہ

بڈگام میں بھارتی فوج کی فائرنگ، مزید 8 کشمیری شہید، پاکستان کا شدید احتجاج

فرانس میں تیز رفتار گاڑی فوجیوں پر چڑھ دوڑی، 6 زخمی

سپورٹس
ٹی ٹوئنٹی میں پاکستان نے سری لنکا کو شکست دیکر سیریز اپنے نام کرلی
لاہور (ویب ڈیسک) پاکستان نے تیسرے ٹی ٹوئنٹی میچ میں مزید پڑھیں ...
ویب ٹی وی
ٹورازم
پاکستان میں خوبصورت اور دلکش مناظر کی کمی نہیں ہے۔
پاکستان میں خوبصورت اور دلکش مناظر کی کمی نہیں ہے۔ posted by Abdur مزید پڑھیں ...
انٹرٹینمینٹ
دنیا بھر میں سب سے زیادہ کمانے والی ماڈل فہرست جاری
امریکی جریدے ’فوربز‘ نے ہر سال کی طرح رواں برس 2017 کی مزید پڑھیں ...
مذہب
مذہب سے منسلک امریکی آمدنی، 15ممالک کی مجموعی آمدنی سے بھی زیادہ
(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکا میں مذہب سے منسلک آمدنی گوگل مزید پڑھیں ...
بزنس
پاکستان کے زرمبادلہ کے ذخائر 19 ارب 69 کروڑ 50 لاکھ ڈالر رہ گئے
کراچی(اے پی پی) پاکستان کے زرمبادلہ کے ذخائر 19 ارب مزید پڑھیں ...